AhnafMedia

اسلامی سال مبارک !

Rate this item
(2 votes)

اسلامی سال مبارک !

محمد الیاس گھمن

 

محرم اسلامی سال کا پہلامہینہ ہے جو فضا ئل وبر کا ت اور کئی اہم نا قابل فر امو ش واقعات وحوادث کو اپنے اندر لیے ہو ئے ہے ۔بہت سے تا ریخی سا نحے اس سے وا بستہ ہیں جن کی کر بنا کی سے امت مر حومہ کا ہر صا حبِ دل شخص مضطرب ہو جا تا ہے۔ اسلامی تا ریخ کا صفحہ اول خلیفہ راشد، مراد نبیﷺ خلیفہ دوم سیدنا عمرفاروق ؓکے ایمانی لہو سے تر بتر نظر آتا ہے۔

 

شہا دت فا روق اعظم ؓ :حضرت فا روق اعظم ؓنے یکم محرم الحرام کو جام شہا دت نو ش کیا۔ سیدنا عمر ؓ مسلمانوں کی وہ عظیم ترین ہستی ہیں کہ جن کو’’ فا روق ‘‘کا لقب در با رِ نبوت سے حاصل ہو ا ،جن کی ذا ت میں خا تم الانبیا ء ﷺکو صفات نبوت نظر آتی ہیں۔ ارشا د فرمایا:

 

’’لوکان بعدی نبی لکا ن عمر ‘‘

 

اگر میرے بعد کوئی نبی ہوتے تو یقینا عمر ہی ہوتے ۔

 

خدا بزرگ وبر تر کے ہا ں حضرت عمر ؓکی مقبولیت کا یہ حال تھا کہ بہت سے مقامات پر اللہ نے حضرت عمر ؓکی رائے کے موا فق قرآن پا ک کو نا زل فرمایا…حضرت عمر ؓ کی حکومت ،عدالت، سیاست اور خلا فت کو دیکھ کر حضر ت علیؓ نے ان کو مسلمانوںکاملجا و ما ویٰ قرار دیا۔ با ئیس لا کھ مر بع میل کے ’’فاتح اعظم‘‘ فا روق اعظمؓ نے بیت الما ل کا قیا م، عدا لتوں کا قیام، ججو ں اور قا ضیوں کی تقرری، فوجی محکمہ ، ان کے وظا ئف، محکمہ پولیس کا قیام اورالگ چھائونیاں، نا دار اور غر با ء کے روزینے مقرر فرمائے، ۲۰رکعات نما ز تر اویح با جماعت ادا کروائی، مسا جد میں روشنی کا انتظام اور انصرام کیا؛ اسلامی تا ریخ کے اور بھی بہت سے سنہرے باب کھو لے جو آج بھی مسلمانا ن عالم کے لیے مشعل راہ ہیں۔

 

شھادت حسین ؓ: ادھر دوسری طرف حضرت حسین ؓ کی شہا دت بھی دسویں محرم الحرام کو ہوئی جو مسلمانو ں کے لئے عظیم صدمہ ہے اور حضرت حسین ؓکی صلابت ایمانی، استقامت اور غیرت دینی کا پتہ دیتی ہے لیکن نام نہا د’’ عا شقا نِ حسین‘‘ نے اس تا ریخ کو مکر وفر یب کے بد بو دا ر پر دو ں میں چھپا نے کے لیے جن واقعات کو فر وغ دیا اور رسو ما ت وبد عا ت کو پر وا ن چڑھا یا وہ سو ائے افسا نہ کذب ودجل کے کچھ بھی نہیں مرثیہ خوانی کی آڑ میں خانوادئہ نبو ت اور اہلِ بیت کی (نعوذ باللہ )تحقیر وتو ہین کی ہے۔ حرمِ حسینؓ کی پا کیزہ صفات، پا ک دامن، عفت ما ٓب خواتین کو العیا ذ

باللہ بے صبرااور سینہ کو بی کرتے دکھا یا جا تاہے۔ کیا ظلم ہے کہ سکینہ ؓو زینب ؓکو زیبِ دا ستا ن بنا کر غلط اور حقائق کے با لکل بر عکس مشہور کیا جا تاہے ؟؟

 

تنبیہ :وطنِ عزیز پا کستان میں مسلمانو ں کی بڑی تعدا د رسم تعزیہ دا ری میں شریک ہوتی ہے ،اس سے اجتناب بہت ضر وری ہے ۔

 

دسویں محرم :شر یعت اسلامیہ نے دسویں محرم کو روزہ کا حکم بھی دیااور اہل وعیال پر وسعت کا بھی ۔جو بھی اس دن اہل وعیا ل پر وسعت کر تاہے اس پر سا را سا ل فراخی رزق کے در وازے کھول دیے جا تے ہیں۔

امام ابو حنیفہ ؒ کوصدرِتاجکستان کا خراج ِعقیدت

 

 

’’آج ؛ابو حنیفہ ؒ کے خیالات ،ان کے بنیادی مقاصد ،دنیا کے مختلف تقاضوں کے درمیان ایک پل ہے اور تمام بنی نوع انسان کے مفادات کے لیے مختلف تہذیبوں کے درمیان گفت وشنید کی بنیاد بن سکتے ہیں ان خیالات کا اظہار تاجکستان کے صدر جناب امام علی رحمان نے ’’دوشنبہ‘‘ میں وسط ایشیا کی سب سے بڑ ی ’’مسجد‘‘ کے سنگ بنیادکے موقع پر کیا ۔

 

ان کا کہناتھا کہ مذہب ،ثقافت اور فلسفہ کی ترکیب سے؛ حنفی عقیدہ، سنی برادری میں سے سب سے زیادہ مستند نوعیت کے طور پر پہچانا جاتا ہے۔ تقریب میں شرکاء کی بہت بڑی تعداد تھی ،مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد نے اس موقع پر اپنے’’ عظیم محسن امام ِاعظم امامِ ابو حنیفہؒ ‘‘ کے نام پر وسط ایشیا کی سب سے بڑی مسجد کا نام رکھا اور اس بات کا عزم کیا کہ بحیثیت قوم وہ اپنے محسن کی تعلیمات کی روشنی میں اتحاد واتفاق پر عمل پیرا ہونگے اور امت مسلمہ کو در پیش چیلنجز کاڈٹ کر مقابلہ کریں گے۔ تجزیہ نگاروں کے مطابق اس سے باہمی محبت اور رواداری کو فروغ ملے گااو رامت میں انس والفت کی فضا پیدا ہوگی۔

 

ادارہ’’ قافلہ حق‘‘ تمام اہل السنہ والجماعۃ کی طرف سے بحیثیت ’’ترجمان‘‘ تاجکستان کے صدر اور سفیر کو اس مبارک اقدام پر مبارکباد پیش کرتا ہے اور امید کرتاہے کہ آئندہ بھی وہ اس طرح کے پروگرامز منعقد کرکے عوام الناس کو اپنے عظیم محسن کی تعلیمات سے روشناس کراتے رہیں گے ۔

 

{چوتھی کھیپ}

 

ما ضی قریب میںایک ایسا قا فلہ گزرا ہے جو صدق وصفا اور علم وعمل میں یگا نگت اور موافقت کا حامل ؛علم تفسیر ،علم حدیث ،علم فقہ ،اصول فقہ، اصول حدیث ،تصوف،تزکیہ اور سلو ک و احسان میں مکمل دسترس رکھنے کے ساتھ سا تھ با طل کو للکا رنے، زندقہ اور بدعا ت کا مٹانے والا تھا، سنت رسول ﷺ کے احیا ء اور حفا ظت کا امین تھا ۔مغر بی سازشو ں اورطاغوتی ایجنڈے کو پا ش پا ش کر نے والا تھا ۔ آج دنیا اس کو ’’علماء دیو بند ‘‘کے مبا رک نام سے یاد کر تی ہے۔

 

علماء دیوبند نے امت مرحومہ کو ’’اہل السنۃ والجماعۃ‘‘ کے ’’حقیقی عقائد ونظریات‘‘ سے آشنا کیا ساتھ ساتھ باطل فرقوں کا رد بھی کیا کہ دنیائے باطل آج بھی لرزاں اور خائف ہے ۔علماء دیوبند کے اسی ورثہ کی امین ’’اتحاد اہل السنۃ والجماعۃ ‘‘نے عرصہ ساڑھے تین سال میں ملک کے طول وعرض میں نوجوانوں کی علمی اوردعوتی تربیت کی ۔چھوٹے چھوٹے کو رسز تشکیل دیے ، بالخصوص فا رغ التحصیل علماء کے لیے ایک سالہ نصاب ترتیب دیا جس میں دور ِحا ضر کے تما م فر قِ با طلہ را فضیت ، پر ویزیت،غیر مقلدیت ، مماتیت،بریلویت ،مودودیت،جماعت المسلمین ،مسعودیت کے گمرا ہانہ نظیریا ت وافکا ر کو زیر بحث لایا گیا ہے ۔

 

الحمد للہ’’ اتحا د‘‘کے پلیٹ فارم سے تربیت یافتہ علماء نے اصلا حِ عقائد اوراصلا حِ اعمال کا مثبت درس شروع کیا ۔گلی گلی کوچہ کوچہ جہاں باطل فرقوں کی مکر وہ السمع آوازیںسکو ن کو بر باد کیے ہو ئے تھیں آج وہا ں اہل السنۃ (حنفیہ) کا طو طی بولتا ہے۔ جہا ں بد عا ت کے ڈروائنے مجسمے تھے آج وہاں سنت رسول ﷺ کے مینار نورنظر آتے ہیں ۔پہلی تین کلاسیں اپنے اپنے علاقے میں رسوم ورواج ،فسق وفجور اوربدعات ومشرکانہ عقائد کو ختم کرنے میں سرگرم ہیں ۔اس نئی چوتھی کھیپ سے توقعات وابستہ ہیں کہ یہ بھی اکابر کے طرز پر اہل باطل کا مردانہ وار مقابلہ کرے گی۔

Read 1833 times

DARULIFTA

Visit: DARUL IFTA

Islahun Nisa

Visit: Islahun Nisa

Latest Items

Contact us

Markaz Ahlus Sunnah Wal Jama'h, 87 SB, Lahore Road, Sargodha.

  • Cell: +(92) 
You are here: Home Islamic Articles (Urdu) اسلامی سال مبارک !

By: Cogent Devs - A Design & Development Company